My Trade Union

سیسی افسران کے خلاف اوپن انکوائری کا اغازچیف سیکریٹری نے اجازت دے دی۔۔
URDU

سیسی افسران کے خلاف اوپن انکوائری کا اغازچیف سیکریٹری نے اجازت دے دی۔۔

Aug 2, 2023

کراچی (رپورٹ شاہد غزالی)چیف سیکرٹری نے کروڑوں روپے کی کرپشن کی شکایات کی صاف و شفاف تحقیقات کے لیے محکمہ انٹی کرپشن سندھ کو باقاعدہ اجازت دیدی .تفصیلات کے مطابق گذشتہ ایک ماہ سے چیئرمین اینٹی کریشن کی جانب سے سندھ ایمپلائز سوشل سیکورٹی انسٹی ٹیوشن کے گریڈ 18 سے گریڈ 20 کے دس سے زائد افسران کے خلاف کروڑوں روپے کی کرپشن کی شکایات پر تحقیقات کے لیے باقاعدہ اجازت کی درخواست چیف سیکرٹری سندھ کے پاس موجود تھی۔ یاد رہے کہ 11 مئی 2023 کو محکمہ اینٹی کرپش سندھ نے کرپشن کی مختلف شکایات ڈائریکٹر اینٹی کرپشن اور چیئرمین اینٹی کرپشن کی باقاعدہ اجازت کے ساتھ ساؤتھ زون کے افسر عبدالحفیظ جتوئی کی سربراہی میں سندھ ایمپلائز سوشل سیکورٹی انسٹی ٹیوشن SESSI کے گلشن اقبال کراچی میں واقع ہیڈآفس پر ایک چھاپہ مارا تھا جس میں ویجیلنس اینڈ سروے سیل، اکاؤنٹ ڈیپارٹمنٹ اور پروکیومنٹ ڈیپارٹمنٹ میں کروڑوں روپے کی کرپشن کی شکایات پر کاروائی کرتے ہوئے اہم ریکارڈ ضبط کرلیا تھا۔لیکن اگلے روز ہی اچانک صورتحال تبدیل ہوگئی تھی اور سندھ سوشل سیکورٹی کے افسران اپنا تمام اوریجنل ریکارڈ محکمہ اینٹی کرپشن سے واپس لے گئے تھے۔بعدازاں ایک شہری نے عدالت میں اس تمام معاملہ پر کیس دائر کیا تھا عدالتی حکم پر چیئرمین اینٹی کرپشن سندھ نے تمام قانونی کارروائی مکمل کرتے ہوئے اوپن انکوائری کے لیے سندھ حکومت سے درخواست کی تھی۔محکمہ محنت کا ذیلی ادارہ کرپشن کے حوالے سے مسلسل خبروں کی زینت بنا ہوا ہے جبکہ اس وقت بھی ایک ارب سے زائد کرپشن کے دو مقدمات نیب عدالت میں زیر سماعت ہیں اور نیب زدہ افسران اہم پوسٹوں پر براجمان ہیں۔ دوسری جانب محکمہ اینٹی کرپشن سندھ نے صرف گذشتہ سات ماہ کے دوران کرپشن کی شکایات پر 9 ایف آئی آر درج کی ہیں۔ جس میں کئی افسران ضمانت پر ہیں اور دو ڈپٹی ڈائریکٹر گزشتہ چھ ماہ سے جیل میں قید ہیں۔۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *