My Trade Union

بنکوں کی ٹریڈ یونین کو سب سے زیادہ نقصان نواز شریف دور میں ہوا۔ حبیب الدین جنیدی
URDU

بنکوں کی ٹریڈ یونین کو سب سے زیادہ نقصان نواز شریف دور میں ہوا۔ حبیب الدین جنیدی

Aug 28, 2023

بھٹو نے اداروں کو نیشنلاٸز کیا تو ٹریڈ یونین میں نکھار آیا تھا۔ نواز شریف نے نج کاری کی مخالفت میں جیل میں ڈالا اورخوب رگڑا لگایا۔ ٹریڈ یونین کی بحالی کے لیٸے ہر سیکٹر کی ایک مضبوط یونین بناٸی جاٸے پیپلز لیبر بیورو اور APTUO کے رہنما حبیب جنیدی کا ماٸی ٹریڈ یونین ڈاٹ کام کو انٹرویو

کراچی (انٹرویو ریاض عاجز ) آل پاکستان ٹریڈ یونین فیڈریشن اور پیپلز لیبر بیورو کے رہنما حبیب الدین جنیدی نے کہا ہے کہ صرف بنکوں میں نہیں تمام سیکٹرز میں ٹریڈ یونین انحطاط پذیر ہے۔ بنک انڈسٹری میں ٹریڈ یونین تحریک کو سب سے زیادہ نقصان نواز شریف کے دور میں ہوا جب انھوں نے نیشنلاٸز بنک اور دیگر اداروں کی نج کاری کی۔ مجھے اور عثمان غنی کو مخالفت کرنے پر جیل میں ڈال کر خوب رگڑا لگا اور ہمیں اس وقت رہاٸی ملی جب نواز شریف نے مسلم کمرشل بنک میاں منشا کے حوالے کردیا وہ ھفت روزہ ٹریڈ یونین پاکستان کی ویب ساٸٹ ماٸی ٹریڈ یونین ڈاٹ کام کو انٹرویو دے رہے تھے۔ انھوں نے بتایا کہ بھٹو صاحب کے دور سے قبل بنک انڈسٹری کا برا حال تھا سیٹھوں نے مزدوروں کے ساتھ برا سلوک روا رکھا تھا۔ بھٹو صاحب نے یکم جنوری 1974 کو بنکوں کو نیشنلاٸز کیا تھا جس کے بعد ٹریڈ یونین تحریک میں نکھار آیا ہماری یونینز نے محنت کشوں کے لیے بہترین معاہدے کیے ٹریڈ یونین اس وقت مضبوط تھیں ۔1990 میں ہم نج کاری کے خلاف ملک بھر میں ون ڈے اسٹراٸیک کی تھی پورے ملک میں بنک بند تھے۔ ۔ نواز شریف نے بنکوں کی نہ صرف نج کاری کی بلکہ تمام بنک میں ڈاون ساٸزنگ اور گولڈن ہینڈ شیک کے ذریعے ہزاروں ملازمین کو فارغ کردیا ۔ آرٹیکل 27B کے ذریعے پابندی لگادی گٸی کہ ریٹاٸرمنٹ یا ٹرمیینیٹ کے بعد کوٸی شخص ٹریڈ یونین کا عہدہ دار نہیں بن سکتا اس سے قبل ہمارا 20 فیصد کوٹہ کسی بھی یونین میں ہوتا تھا۔ اس کے ساتھ سی بی اے کو دفتر دینے اور گاڑیاں دینے پر پابندی لگادی گٸی پاکٹ یونین کے ذریعے یونین کو کمزور کیا گیا۔ انھوں ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ٹریڈ یونین کو دوبارہ طاقتور بنانے کے لیے ضروری ہے کہ ہر سیکٹر کی ایک مضبوط یونین بناٸی جاٸے اور یہ صرف مزدوروں کے اتحاد سے ہی ممکن ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *