My Trade Union

سیسی میں چھ ماہ کے دوران اعلیٰ افسران کو اضافی تنخواہیں اعزازیہ جاری
URDU

سیسی میں چھ ماہ کے دوران اعلیٰ افسران کو اضافی تنخواہیں اعزازیہ جاری

Sep 9, 2023

کراچی (رپورٹ شاہد غزالی ) سندھ ایمپلائز سوشل سیکورٹی انسٹی میں گزشتہ چھ ماہ کے دوران کروڑوں روپے اضافی تنخواہوں، اعزازیہ کی مد میں کمشنر، وائس کمشنر، ڈائریکٹرز اور ہیڈآفس کے افسران میں تقسیم کردئیے گئے سندھ ایمپلائز سوشل سیکورٹی انسٹی ٹیوشن میں جہاں 130 کڑوڑ روپے کی کرپشن و بدعنوانی کی محکمہ انٹی کرپش میں چیف سیکرٹری سندھ کی ہدایت پر انکوائری کررہا ہے وہاں ایک اور اسیکنڈل سامنے آیا ہے۔ گذشتہ چھ ماہ کے دوران کمشنر سیسی، وائس کمشنر سیسی، ڈائریکٹر ایڈمنسٹریشن سمیت دیگر ڈائریکٹرز اور ان کا مخصوص عملہ کو بجٹ سمیت دیگر معمول کے کاموں کی بنیاد پر جو ان کا ملازمت کا بنیادی کام ہے۔ اس کو بنیاد بنا کر ہر ملازم کو دو دو تین تین اضافی تنخواہیں بیک وقت دی گئی ہیں اور سیسی ہیڈآفس میں ایک ایک افسر کو گزشتہ چھ میں چھ سے آٹھ اضافی بنیادی تنخواہیں اب تک مل چکی ہیں اور فیضیاب ہونے والے افسران کو فی کس 10 لاکھ سے زائد تک کی ادائیگی ہوچکی ہے۔
اہم بات یہ ہے گورننگ باڈی یا چیئرمین گورننگ باڈی سے اس کی کوئی اجازت لینا بھی گورا نہیں کی گئی ہے۔
کمشنر سیسی نا صرف خود بھی اپنے دستخطوں سے مسلسل اضافی بنیادی تنخواہیں بطور اعزازیہ لے رہے بلکہ اپنے اسٹاف اور ہیڈآفس کے مخصوص ڈائریکٹرز کو بھی دے رہے ہیں۔ محنت کشوں کے فنڈ کو سیسی میں جس طرح لوٹا جا رہا ہے اس کی مثال ملنا مشکل ہے۔ یاد رہے کہ چیف سیکرٹری سندھ فخر عالم عرفان کی ہدایت پر محکمہ سندھ اسمبلی بلڈنگ کے ملازمین کو اعزازیوں کی مد میں کڑوڑوں کی ادائیگی پر محکمہ انٹی کرپش سندھ اپنی تحقیقات کا باقاعدہ کا آغاز کر چکا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *